درخت کے بغیر گھر کے نقشہ کی منظوری بند

اب سے 5 اور 10 مرلہ کے گھر کا نقشہ منظور کرنے کے لیے بھی درختوں کے لیے جگہ مختص کرنا لازمی ہے، کمشنر لاہور

لاہور : درخت کے بغیر گھر کے نقشہ کی منظوری بند کر دی گئی ہے۔ کمشنر لاہور نے کہا ہے کہ اب سے 5 اور 10 مرلہ کے گھر کا نقشہ منظور کرنے کے لیے بھی درختوں کے لیے جگہ مختص کرنا لازمی ہے۔ کمشنر لاہور آصف بلال نے بلڈنگ بائی لاز (گھروں کی تعمیر کے قانون) پر اجلاس میں کہا ہے کہ 5 سے 10 مرلہ کے گھر میں بھی درخت لگانا لازمی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ اب گرین ایریا کے بغیر گھروں کا کوئی نقشہ منظور نہیں کیا جائے گا۔
تفصیلات کے مطابق کمشنرلاہور و ایڈمنسٹریٹر آصف بلال لودھی کے زیر صدارت لاہور شہر میں عمارتوں کے بائی لاز کے حوالے سے اجلاس ہوا جس میں انہوں نے درخت لگائے بغیر گھر کے نقشہ کی منظوری پر پابندی عائد کر دی ہے۔ اجلاس میں ایم او پلاننگ رانا نوید اختر نے بریفنگ کے دوران کمشنر لاہور کو بلڈنگ بائی لاز اور نقشوں کے تکنیکی امور کے بارے میں تفصیلات بھی بتائیں۔
انہوں نے بتایا کہ پانچ سے دس مرلہ کے گھر کے نقشہ کی منظوری زونز جبکہ ایک کنال کے گھر کے نقشوں کی منظوری چیف آفیسر سے لی جاتی ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ایک کنال سے بڑے گھر کی منظوری ایڈمنسٹریٹر سے مشروط ہے۔ اس اجلاس میں ایچ ایل ڈی سی سے منظور نقشوں کی باقاعدہ منظوری کے حوالے سے بھی بریفنگ دی گئی۔ اجلاس میں 8 نقشہ جات زیر بحث لائے گئے جس میں ایڈمنسٹریٹر نے 7 کی منظوری دے دی جس میں 2 کمرشل عمارتیں، 2 انڈسٹریل بلڈنگز اور 3 فارم ہاؤسز شامل ہیں جبکہ 1 انڈسٹریل بلڈنگ کا نقشہ مسترد کر دیا گیا ہے۔
کمشنر لاہور آصف بلال لودھی نے افسروں کو بلڈنگ بائی لاز میں ترمیم کی اجازت دیتے ہوئے حکم دیا ہے کہ اب کوئی نقشہ گرین ایریا کے بغیر منظور نہیں کیا جائے گا اور یہ کہ 5 تا 10 مرلہ کے گھر میں بھی درخت لگانا لازمی ہے۔ کمشنر لاہورکا مزید کہنا تھا مخدوش عمارتوں کو نوٹس دیے جائیں اور اس کے علاوہ انہیں فوری طور پر ریسکیو بھی کیا جائے۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 25 جولائی 2019

Share On Whatsapp