ابو ظہبی میں پالتو کُتوں کو سڑک پر لانے والے ہوشیار ہو جائیں

میونسپلٹی کے مطابق کُتوں کے گلے میں پٹّا نہ باندھنے کی صورت میں 5 ہزار درہم کا جرمانہ بھُگتنا ہو گا

ابو ظہبی : اگر آپ ابو ظہبی میں مقیم ہیں اور پالتو جانوروں خصوصاً کُتّوں کے بھی شوقین ہیں تو ہوشیار ہو جائیں۔ کیونکہ ابوظہبی میونسپلٹی کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ شاپنگ مالز اور ریسٹورنٹس میں کُتّوں کا لانا قطعاً ممنوع ہے، اگر کوئی ایسی حرکت کرتا ہے تو اُسے پانچ ہزار درہم کا بھاری جرمانہ کیا جائے گا۔ میونسپلٹی کی جانب سے یہ تنبیہ جانوروں کے تحفظ سے متعلق جاری حالیہ مہم کے دوران سامنے آئی ہے جس کا مقصد پالتو جانوروں کے شوقین افراداور ڈیلرز کو آگاہ کرنا ہے کہ وہ جانوروں کی نگہداشت اور تحفظ کا مکمل خیال رکھیں۔
یہ بات ابو ظہبی میونسپلٹی کے شعبہ پبلک سیفٹی کے سربراہ ڈاکٹر سعید محمد الرومیدی نے بتائی۔ اماراتی قوانین کے مطابق اپنے پالتو جانوروں کو سڑک پر آوارہ یا اکیلا چھوڑنے پر دو ہزار درہم کا جرمانہ بھُگتنا ہو گا۔ اسی طرح ایسے جانور جن کی فروخت منع ہے، اگر کوئی شخص ایسا کرتا پایا گیا تو اُسے 10 ہزار درہم کا جرمانہ ادا کرنا ہوگا، اسی طرح اگر کوئی شخص بیمار جانور فروخت پانے کا قصور وار پایا گیا تو اُسے جرمانے کی مد میں 3 ہزار درہم کی رقم ادا کرنا ہو گی۔
اماراتی قانون کے مطابق بلی اور کُتوں کے علاوہ کوئی اور پالتو جانور بغیر لائسنس کے رکھنا منع ہے۔ اگر کوئی شخص ایسی حرکت کرے گا تو اُس پر پانچ ہزار درہم کا جرمانہ عائد کیا جائے گا۔ پالتو جانوروں کو فروخت کرنے والے ڈیلرز کے لیے لازمی ہو گا کہ وہ اپنے ہاں رکھے گئے جانوروں کا ویٹرنری ڈاکٹر سے وقتاً فوقتاً چیک اپ کروائیں۔ جانوروں کا دُکاندار کسی بھی ایسے شخص کو جانور فروخت کرنے کا مجاز نہیں ہے، جس کی عمر 18 سال سے کم ہو، البتہ اگر اُن کے ساتھ کوئی بڑی عمر کا فرد موجود ہو تو ایسا کرنے میں کوئی ہرج نہیں۔ نابالغ افراد کو جانور فروخت کرنے کی صورت میں تین ہزار درہم کا جرمانہ ہو گا۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 25 جولائی 2019

Share On Whatsapp