دُبئی: مریضہ نے اپنے ساتھ جنسی چھیڑ چھاڑ کرنے والے ڈاکٹر کو پکڑوا دیا

خاتون کے مطابق وہ ملزم کے فزیو تھراپی کلینک میں علاج کروانے گئی تھی

دُبئی : دُبئی میں مقیم ایک عرب خاتون نے اپنے ساتھ غلط حرکات کرنے والے فزیو تھراپسٹ کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا۔ پولیس کو درج کرائی گئی ایف آئی آر میں 45 سالہ خاتون نے 38 سالہ فزیو تھراپسٹ پر دورانِ علاج جنسی چھیڑ چھاڑ کرنے کے الزامات عائد کیے ہیں۔ استغاثہ کے مطابق یہ واقعہ رواں سال 5 مئی کو پیش آیا جب 45 سالہ عرب خاتون علاج کی غرض سے ملزم ڈاکٹر کے فزیو تھراپی کلینک میں گئی۔
خاتون وقوعہ سے ایک ہفتہ پہلے تک کندھے کی فزیو تھراپی کرواتی رہی۔ مگر ایک روز فزیو تھراپسٹ نے اس دوران اُس کے جسم کے دیگر حصّوں کو بھی بار بار چھُوا۔ مریضہ نے اُسے کئی بار ایسا کرنے سے منع کیامگر یہ رنگین مزاج ڈاکٹرا پنی غلط حرکات سے باز نہ آیا اور پھر اچانک خاتون کو چُومنا شروع کر دیا۔ لیکن خاتون نے جب اُسے اچانک پرے دھکیل دیا تو ڈاکٹر ایک لفظ کہے بغیر کمرے سے باہر نکل گیا۔
گھبرائی ہوئی خاتون خود بھی فوری طور پر کلینک سے باہر آ گئی۔ تھوڑی دیر بعد خاتون نے فزیو تھراپسٹ کے موبائل فون پر پیغام بھیجا کہ اُس نے ایسی نازیبا حرکات کیوں کیں؟ جس کے جواب میں ڈاکٹر نے اُسے ٹیکسٹ میسج کیا کہ وہ اُس کی خوبصورتی سے متاثر ہو کر خود پر قابو نہیں رکھ سکا۔ اُسے اتنا قریب پا کر وہ جذبات کی رو میں بہہ گیا۔ ڈاکٹر نے مزید اپنے پیغام میں لکھا ”تم بہت خوبصورت ہو، میں تمہیں چاہتا ہوں۔“ اس طرح خاتون نے بڑی ہوشیاری سے ڈاکٹر کی جنسی حرکات کا اظہار اُس کے ٹیکسٹ میسجز کی صورت میں کروا کر پولیس میں رپورٹ درج کرا دی۔ اور یہ پیغامات بھی بطور ثبوت پیش کر دیئے۔ اس مقدمے کی سماعت اگلی تاریخوں تک ملتوی کر دی گئی ہے۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 25 جولائی 2019

Share On Whatsapp