فجیرہ: والد کو اپنے بیٹے کا موبائل فون توڑنا مہنگا پڑ گیا

خاتون نے اپنے خاوند کے خلاف مقدمہ درج کرا دیا

فُجیرہ : ایک اماراتی والد کو اپنے بیٹے کا موبائل فون توڑنا بہت مہنگا پڑ گیا۔ بیٹے کی والدہ نے اپنے سابقہ خاوند کے خلاف مقدمہ درج کر ادیا۔ استغاثہ کے مطابق ملزم کا اپنی بیوی سے اکثر جھگڑا رہتا تھا، جس کے باعث اُن کے درمیان طلاق واقع ہو گئی۔ عدالتی حُکم کے تحت بچوں کو والدہ کی تحویل میں دے دیا گیا جبکہ والد کو اجازت دی گئی کہ وہ اپنے بچوں کو مخصوص دِنوں میں مِل سکتا ہے۔
ایسے ہی ایک موقع پر جب والد کی اپنے بیٹے سے ملاقات ہوئی تو اُس نے بیٹے کا موبائل فون پکڑا تو اُس کے فیس بُک اکاؤنٹ میں اُسے اپنے بیٹے کے چند ایسے دوستوں کے کانٹیکٹ بھی دکھائی دیئے جنہیں وہ پسند نہیں کرتا تھا، ان میں ایک لڑکی بھی شامل تھی۔ بس اتنا دیکھنا تھا ، اس پر شدید غصّے کی کیفیت طاری ہو گئی اور اُس نے موبائل فون زور سے زمین پر دے مارا اور بچے کو سخت بُرا بھلا کہا۔
بچے نے والدہ کو یہ بات بتائی تو اُسے اپنے سابقہ خاوند کی جانب سے موبائل فون توڑنے کی حرکت بہت بُری لگی۔ خاتون نے اپنے سابقہ خاوند کے خلاف مقامی پولیس اسٹیشن میں درخواست جمع کرا دی۔ خاتون نے درخواست میں الزام عائد کیا کہ اُس کے سابقہ خاوند نے اپنے بیٹے پر حملہ کیا اور اُس کا موبائل فون توڑ دیا۔ جب عدالت میں مقدمے کی سماعت ہوئی تو ملزم کے وکیل نے عدالت میں یہ موٴقف اختیار کیا کہ والد نے ایسا اس لیے کیا کیونکہ وہ اپنے بچے کی اخلاقی تربیت کے حوالے سے بہت حساس ہے۔ جو موبائل فون توڑا گیا وہ بھی اُسی نے اُسے خرید کر دیا تھا۔ اس مقدمے کا فیصلہ اگلی سماعت میں سُنایا جائے گا۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 25 جولائی 2019

Share On Whatsapp