آئی سی سی نے میچ کے دوران کھلاڑی کو تبدیل کیے جانے کا نیا قانون متعارف کروا دیا

سر پہ چھوٹ لگنے کی صورت میں میچ کے ددوران کھلاڑی کو تبدیل کیا جا سکے گا، قانون کی منظوری دے دی گئی

لندن : آئی سی سی نے میچ کے دوران کھلاڑی کو تبدیل کیے جانے کا نیا قانون متعارف کروا دیا ہے۔ آئی سی سی کی سالانہ تقریب کے دوران نئے قانون کی منظوری دی گئی ہے۔ قانون کے مطابق اب اگر کسی کھلاڑی کے سر پہ گیند لگ جائے اور وہ زخمی ہو جائے تو اس کے متبادل کے طور پہ بارہویں کھلاڑی کو میدان میں لایا جا سکے گا۔ آئی سی سی کی سالانہ تقریب کے دوران آئی سی سی نے زمبابوے کرکٹ ٹیم پر پابندی بھی عائد کردی گئی ہے۔
زمبابوے کے کرکٹ بورڈ میں مسلسل سیاسی مداخلت کے باعث افریقی ٹیم پر غیر معینہ مدت کی پابندی عائد کرنے کا اعلان۔ تفصیلات کے مطابق دنیائے کرکٹ ایک بڑی ٹیم کی کرکٹ سے محروم ہوگیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ آئی سی سی نے زمبابوے کے کرکٹ بورڈ میں مسلسل سیاسی مداخلت کے باعث اس پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ زمبابوے کی کرکٹ ٹیم پر بین الاقوامی کرکٹ کے دروزے غیر معینہ مدت کیلئے بند کر دیے گئے ہییں۔
اس حوالے سے مزید بتایا گیا ہے کہ آئی سی سی نے دنیا کے تمام فل ممبرز کے کرکٹ بورڈز میں سیاسی مداخلت مکمل طور پر ختم کرنے کی وارننگ جاری کر رکھی ہے۔ جب تک زمبابوے کرکٹ بورڈ خود کو سیاسی مداخلت سے پاک نہیں کرے گا، اس پر عائد کی جانے والی پابندی برقرار رہے گی۔ آئی سی سی کے اس فیصلے کے باعث زمبابوے کرکٹ ٹیم کی تمام بین الاقوامی مصروفیات بھی منسوخ کر دی گئی ہیں۔
آئی سی سی کے اس فیصلے کے باعث پاکستان کی بھی زمبابوے کیساتھ شیڈول تمام سیریزیں منسوخ ہو جائیں گی۔ آئی سی سی نے کسی کھلاڑی کے زخمی ہونے کی صورت میں اس کے متبادل کے طور پہ دوسرے کھلاڑی کو میچ کے دوران کھلانے کی اجازت دے دی ہے۔ زخمی ہونے والے کھلاڑی کے متبادل کے طور پہ آنے والا کھلاڑی اب فیلڈنگ کے ساتھ ساتھ بیٹنگ اور باؤلنگ بھی کر سکے گا۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 18 جولائی 2019

Share On Whatsapp