میٹھے مشروبات کینسر کا باعث بن سکتے ہیں، نئی میڈیکل ریسرچ

لندن : نئی میڈیکل ریسرچ کے مطابق میٹھے مشروبات کینسر کا باعث بن سکتے ہیں ۔برطانوی میڈیکل جرنل نے فرانسیسی محققین کے حوالہ سے رپورٹ میں بتایا ہے کہ شکر والے مشروبات کا روزانہ استعمال کسی بھی طرح صحت مندانہ نہیں اور یہ سرطان کا باعث ہو سکتا ہے۔ اسی طرح پھلوں کی جوس کا استعمال بھی غیر مفید اور جسم کے لیے نقصان دہ قرار دیا گیا ہے۔فرانسیسی محققین نے تحقیقی رپورٹ نو برس کے دوران جمع کیے گئے اعداد و شمار کی روشنی میں مرتب کی ہے۔
جنہوں نے اس سلسلہ میں ایک لاکھ بالغ افراد کے انٹرویوز کیے جن کی اوسط عمریں برس تھیں ۔ اس رپورٹ کی تفصیلات کینسر ریسرچ برطانیہ کے سینیئر محقق گراہم ویلر نے میڈیا کے سامنے پیش کیں ؂۔محققین نے تجویز کیا ہے کہ حاصل شدہ ڈیٹا سے ایسے شواہد ملے ہیں جن کے مطابق میٹھے مشروبات سے کینسر پیدا ہونے کا امکان ہے۔رپورٹ اس امر کی نشاندہی کی گئی ہے کہ دنیا بھر کے ہر ملک میں میٹھے مشروبات کا استعمال غیرمعمولی ہے جن کے استعمال سے موٹاپے میں اضافہ ہوتا ہے جو انسانی جسم میں کئی بیماریوں کا باعث بنتا ہے، ان میں ذیابیطس، معدے کے اعضاء کی ناقص کارکردگی، گردے کے مسائل اور کینسر شامل ہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 12 جولائی 2019

Share On Whatsapp