جج ارشد ملک کو عہدے سے ہٹانے کے فیصلے کے بعد نواز شریف کیخلاف فیصلے کو کالعدم قرار دیکر انہیں فوری رہا کیا جائے ‘(ن) لیگ

ثابت ہوگیا ہے سابق وزیراعظم کو دبا ئوکے تحت سزا سنائی گئی ہے،نواز شریف کو دی گئی سزا ختم ہونے تک انصاف کے تقاضے پورے نہیں ہونگے‘ مریم اورنگزیب، عظمیٰ بخاری

لاہور : پاکستان مسلم لیگ (ن) نے کہا ہے کہ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کو عہدے سے ہٹانے کے فیصلے کے بعد نواز شریف کے خلاف فیصلے کو بھی کالعدم قرار دے کر انہیں فوری رہا کیا جائے ۔ مسلم لیگ (ن) کی مرکزی سیکرٹری اطلاعات مریم اورنگزیب نے اپنے بیان میں کہا کہ اس فیصلے سے تصدیق ہوگئی کہ وڈیو اصلی ہے ۔جج صاحب نے تسلیم کرلیا ہے کہ دبا ئوپر فیصلے کیے ۔
احتساب عدالت کے جج کو ہٹانے کے بعد نواز شریف کے خلاف فیصلہ کی قانونی حیثیت بھی خود بخود ختم ہو گئی ہے ۔جج کو ہٹانے سے ثابت ہو گیا ہے کہ مریم نواز جو حقائق عوام کے سامنے لائیں وہ درست ہیں۔مسلم لیگ (ن) پنجاب کی سیکرٹری اطلاعات عظ،یٰ بخاری نے کہا کہ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کو عہدے سے ہٹانا مسئلے کا حل نہیں۔انہیں عہدے سے ہٹانا یہ تسلیم کرنا ہے کہ جج صاحب غیر آئینی اقدام کے مرتکب ہوئے ہیں۔
جج کو عہدے سے ہٹانے سے یہ ثابت ہوگیا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کو دبا ئوکے تحت سزا سنائی گئی ہے۔جب تک نواز شریف کو دی گئی سزا ختم نہیں ہوتی انصاف کے تقاضے پورے نہیں ہوں گے۔جج کو ہٹانا پہلا قدم ہے تاہم اس معاملے کی شفاف تحقیقات کی جائیں۔حقائق سامنے آنے پر ثابت ہوگیا ہے کہ نواز شریف غلط سزا کاٹ رہے ہیں۔اب یہ واضح ہوچکا ہے کہ نواز شریف بے گناہ جیل میں قید ہیں۔کسی بھی بے گناہ شخص کو جیل میں قید رکھنا انصاف کے قتل کے مترادف ہے۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 12 جولائی 2019

Share On Whatsapp