جعلی اکاؤنٹس کیس میں گرفتار عبدالغنی مجید کی سات روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا منظور

اسلام آباد کی احتساب عدالت کا ملزم کو 19 جولائی کو دوبارہ احتساب عدالت میں پیش کرنے کا حکم

اسلام آباد : اسلام آباد کی احتساب عدالت نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں گرفتار عبدالغنی مجید کی سات روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا منظور کرتے ہوئے 19 جولائی کو دوبارہ احتساب عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ہے ۔ جمعہ کو اسلام آبادکی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی عدالت میں عبدالغنی مجید کی جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے کے بعد پیش کیا گیا ۔ دور ان سماعت نیب نے عبدالغنی مجید کی مزید 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کر دی ۔
نیب پراسیکیوٹر نے کہاکہ 200 ملین روپے عبدالغنی مجید کو جعلی اکاؤنٹس کے ذریعے ملے،اومنی گروپ کے چیف فانشل آفسر اسلم مسعود کے ذریعے 232 ملین کیش کرائے گئے تاہم وکیل صفائی نے مزید جسمانی ریمانڈ کی مخالفت کر دی۔ دلائل سننے کے بعد عدالت نے عبدالغنی مجید کی جسمانی ریمانڈ پر فیصلہ محفوظ کیا کچھ دیر بعد جج محمد بشیر نے فیصلہ سناتے ہوئے نیب کی عبدالغنی مجید کی سات روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا منظور کرتے ہوئے 19 جولائی کو دوبارہ احتساب عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 12 جولائی 2019

Share On Whatsapp