مریم نواز نے احتساب عدالت میں پیشی کے حوالے سے اہم فیصلہ کر لیا

لیگی خاتون رہنما نے لاہور سے اسلام آباد ریلی کی صورت میں جانے کا ارادہ تبدیل کر لیا

اسلام آباد : مسلم لیگ کی نائب صدر اور سابق وزیر اعظم نواز شریف کی بیٹی مریم نواز نے احتساب عدالت میں پیشی کے حوالے سے اہم فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق مریم نواز نے نیب کی جانب سے پیشی کے حوالے سے سینئر لیگی رہنماؤں سے مشاورت کی ہے۔ مریم نواز کو لیگی رہنماؤں نے مشورہ دیا ہے کہ وہ 18 جولائی کو اسلام آباد پہنچیں۔ تاہم اس مشاورت کے بعد یہ طے پایا ہے کہ مریم نواز اسلام آباد میں نیب کے ہیڈ کوارٹر میں پیشی کے لیے لاہور سے اسلام آباد کارکنوں کے ساتھ ریلی کی صورت میں نہیں جائیں گی۔
بلکہ پہلے ہی جائیں گی۔ نیب حکام کی جانب سے مریم نواز کو کیلبری فونٹ اور دیگر دستاویزات کے معاملے میں جعلسازی سے کام لینے کے الزام میں 19 جولائی کو طلب کیا گیا ہے۔اس سلسلے میں مزید معلومات یہ سامنے آئی ہیں کہ مریم نواز 18 جولائی کی صبح اسلام آباد روانگی سے قبل کوٹ لکھپت جیل میں بند اپنے والد نواز شریف سے ملاقات کریں ۔ جہاں نیب میں پیشی کے حوالے سے مشاورت کے بعد وہ واپس جاتی عمرہ آئیں اور پھر وہاں سے بذریعہ موٹر وے اسلام آباد روانہ ہو جائیں گی۔
یاد رہے کہ اس سے قبل یہ خبریں سامنے آئی تھیں کہ مریم نواز جب اسلام آباد میں نیب میں پیش ہوں گی تو وہ ایک بڑی ریلی کی صورت میں آئیں گی۔ایک معروف ٹی وی اینکر نے دعویٰ کیا تھا کہ مریم نواز چند پارٹی رہنماوٴں کے ساتھ نہیں بلکہ ہزاروں لوگوں کے ساتھ نیب میں پیش ہوں گی۔ان لوگوں میں پاکستان پیپلز پارٹی کے کارکنان بھی شامل ہوں گے۔مریم نواز کے لیے منڈی بہاالدین جیسی ریلی کی منصوبہ بندی کی جائے گی۔
اور اس طرح مریم نواز لاہور سے بذریعہ جی ٹی روڈ اسلام آباد ایک ریلی کی صورت میں جائیں گی۔یاد رہے کہ اسلام آباد کی احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس کیس میں سابق وزیرِاعظم نواز شریف کو 10 سال قید، ایک ارب 29 کروڑ روپے جْرمانہ، مریم نوازکو سات سال قید، 32 کروڑ روپے جْرمانہ، شریف فیملی کے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس بحقِ سرکار ضبط کرنے کا حکم اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو بھی ایک سال قید بامشقت کی سزا سنائی تھی۔
جس کے بعد سابق وزیراعظم نواز شریف، ان کی بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) صفدر کی جانب سے ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا کا فیصلہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کیا گیا تھا۔ بعد ازاں گذشتہ برس ستمبر میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت کی جانب سے سابق وزیراعظم نواز شریف،ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) صفدر کو سنائی گئی سزا معطل کرتے ہوئے تینوں کی رہائی کا حکم دے دیا تھا جس کے بعد انہیں اڈیالہ جیل سے رہا کردیا گیا تھا۔
تاہم اب نیب نے ایک بار پھر مریم نواز کو طلب کر لیا ہے۔ ایون فیلڈ ریفرنس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ کے معاملے پر مریم نواز کو نوٹس جاری کرد یا گیا تھا۔ق مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے 19 جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس کیس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ کے معاملے پر عدالت طلب کیا تھا۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 12 جولائی 2019

Share On Whatsapp