مسلم لیگ (ن) نے آزادی اظہار رائے اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کیخلاف مذمتی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کر ادی

حکومت جبر اور ظلم سے سیاسی مخالفین کی آواز کو دبا رہی ہے ‘ عظمیٰ بخاری کی قرارداد میں اقوام متحدہ سے بھی نوٹس لینے کامطالبہ

لاہور : پاکستان مسلم لیگ (ن) کی جانب سے آزادی اظہار رائے اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کیخلاف مذمتی قرارداد پنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کر ادی گئی ۔رکن عظمی بخاری کی جانب سے جمع کرائی گئی قرارداد کے متن میں کہا گیا ہے کہ عوامی نمائندوںکے میڈیا پر انٹرویو نشر کرنے سے روکنا کھلی ریاستی دہشتگردی ہے۔پیمرا رولز کی کسی بھی شق میں ایسے شخص جس کا مقدمہ کسی عدالت میں زیر سماعت ہواس کی خبر نشر کرنے کی ممانعت نہیں ۔
ایسا کوئی بھی قانون پاکستان یا دنیا کے کسی بھی ملک میں نہیں ہے۔ایسی پابندیاں بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہیں۔ایسی پابندی پاکستان کے آئین کے آرٹیکل 19 کی خلاف ورزی ہے۔پاکستانی میڈیا کو صولت مرزا، طالبان رہنما احسان اللہ احسان اور بھارتی جاسوس کلبھوشن کے انٹرویوز نشر کرنے کی اجازت ہے لیکن پاکستانی میڈیاکوعوامی نمائندوں کے انٹرویو یا پروگرامز نشر کی اجازت نہیں ہے۔قرارداد میں اقوام متحدہ سے بھی مطالبہ کیا گیا ہے کہ پاکستان میں حکومت جبر اور ظلم سے سیاسی مخالفین کی آواز کو دبا رہی ہے جس کا نوٹس لیا جانا چاہیے ۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 12 جولائی 2019

Share On Whatsapp