عمران خان کا بھانجا بھی جنسی ہراسگی کے الزامات کی زد میں آ گیا

گلوکارہ میشا شفیع نے حسان خان نیازی کے خلاف بھی می ٹو سکینڈل لانے کی دھمکی دے دی

کراچی : گلوکارہ میشا شفیع نے کچھ عرصہ قبل جب معروف گلوکار علی ظفر پر الزام عائد کیا تھا کہ ایک مشروب ساز کمپنی کے کانسرٹ کے دوران علی ظفر نے اُنہیں جنسی ہراسگی کا نشانہ بنایا تھا۔ تو اس معاملے کو بہت زیادہ شہرت مِلی۔ یہاں تک کہ بات عدالت تک جا پہنچی۔ علی ظفر نے بھی میشا شفیع پر ہتکِ عزت کا دعویٰ دائر کیا ہے۔ دونوں کے درمیان یہ تنازعہ ابھی تک عدالت میں چل رہا ہے کہ اس دوران میشا شفیع نے مبینہ طور پر ایک اور شخصیت کے خلاف بھی می ٹو اسکینڈل لانے کی دھمکی دے دی ہے۔
یہ شخصیت کوئی اور نہیں بلکہ وزیر اعظم عمران خان کے بھانجے حسان خان نیازی ہیں۔ جنہوں نے الزام عائد کیا ہے کہ میشا شفیع نے میرے خلاف می ٹو اسکینڈل لانے کی دھمکی دی ہے۔ مجھے غیر مُلکی فنڈنگ پر خاموش رہنے کی خاطر دھمکایا جا رہا ہے۔ میشا شفیع اور اس کی ٹیم ذاتی مقاصد کے لیے می ٹو مہم کو استعمال کر رہی ہے۔ تفصیلات کے مطابق حسان کو میشا شفیع نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر بلاک بھی کر دیا ہے۔
ذرائع سے بات کرتے ہوئے حسان نیازی نے کہا کہ میں نے میشا اور نگہت کومِلنے والی کروڑوں روپے کی غیر مُلکی فنڈنگ پر سوال اُٹھائے تھے۔ میشا شفیع نے اپنی ٹیم کے ذریعے بیرسٹر حسان خان نیازی کے خلاف ہراسگی کے الزامات سامنے لانے کی دھمکی دے دی ہے۔ یہ سب کجھ اس لیے کیا جار ہا ہے تاکہ میں اُن کی غیر مُلکی فنڈنگ کے حوالے سے خاموش رہوں۔ حسان کا کہنا ہے کہ جو بھی اُن سے غیر مُلکی فنڈنگ کے حوالے سے سوال پُوچھتا ہے یہ لوگ اُسے دھمکیاں دیتے ہیں۔
ایف آئی اے میشا شفیع اور اُن کی وکیل نگہت داد کو ملنے والی غیر مُلکی فنڈنگ کی تحقیقات کا مطالبہ کرے۔ اس سے قبل عدالت میں معروف گلوکار علی ظفر نے بھی عدالت میں موقف اختیار کیا تھا کہ اُنہیں ہراسگی کے الزامات کا نشانہ بنانے والی خواتین کا تعلق براہِ راست نگہت داد سے ہے۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 11 جولائی 2019

Share On Whatsapp