Pesticide Made Cockroaches Virtually Unkillable

حشرات کُش ادویات نے حشرات کو نا قابل تسخیر بنا دیا

جرمن کا کروچز : میں احشرات کُش دویات کے خلاف  مدافعیت تیزی سے بڑھ رہی ہے۔جلد ہی ان حشرات کو حشرات کُش ادویات سے مارنا ناممکن ہو جائے گا۔ لائیو سائنس کی رپورٹ کے مطابق حشرات کی   اس  قسم پر  بہت سی  حشرات کُش ادویات کا اثر نہیں ہوتا۔
حشرات کا قلع قمع کرنے والے گھروں میں حشرات مارنے کے لیے ایک دوا کی ناکامی کے بعد دوسری دوا استعمال کرتے ہیں  تاہم محققین کا کہنا ہے کہ  یہ روایتی طریقہ اب کام نہیں کر رہا۔
مرنے والے حشرات کے انڈوں سے نکلنے والے بچے  پیدائشی طور پر حشرات کُش ادویات کے خلاف مدافعیت  رکھتے ہیں۔سائنٹیفک رپورٹس میں شائع ہونے والی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ  حشرات میں مدافعیت ایک ہی نسل میں ہو رہی ہے جو خطرناک بات ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ حشرات میں  کئی اقسام کی ادویات کےخلاف مدافعیت پیدا ہونے کا مطلب ہے کہ اب انہیں  صرف ادویات سے کنٹرول کرنا ممکن نہیں رہے گا۔

ماہرین نے اس حوالے سے دو مختلف مقامات پر حشراات کی تین آبادیوں پر  مختلف  حشرات کش ادویات کے تجربات کئے۔ یہ تجربات 6 ماہ تک جاری رہے۔محققین نے یہ تجربات ڈینویل ، الینوائے اور انڈیانا پولس، انڈیانا  کے اپارٹمنٹس میں کیے۔
محققین نے  حشرات کے ایک گروپ پر صرف ایک دوا اآزمائی۔ دوسرے گروپ پر دو  ادویات آزمائیں جبکہ تیسرے گروپ پر  تین مختلف ادویات آزمائیں۔
تیسرے گروپ میں ہر ماہ ایک دوا آزمائی گئی۔اس تجربے میں ماہرین نے دیکھا کہ  حشرات  میں حشرات کش ادویات چھڑکنے کے باوجود اُن کے خلاف مدافعیت پیدا ہو چکی ہے۔ تیسرے گروپ کے حشرات پر تو ادوایات نے کوئی اثر ہی نہیں کیا اور اُن کی آبادی بھی بڑھتی رہی۔تیسرے گروپ کے حشرات کے انڈوں  سےپیدا ہونے والے بچوں میں دیکھا گیا کہ اُن میں  اپنے والدین  پر چھڑکی گئی  ادویات کےخلاف بھی مدافعیت پیدا ہو چکی ہے اور نئی ادویات کے خلاف بھی قوت مدافعیت زیادہ ہے۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 4 جولائی 2019

Share On Whatsapp
سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں