ورلڈ بینک کے ساتھ 91 کروڑ 80 لاکھ ڈالر کا معاہدہ طے پاگیا

آئی ایم ایف سے معاہدے کے بعد عالمی بینک سے قرض ملنے کی راہ ہموار ہوئی ،ایشیائی ترقیاتی بینک کی طرف سے بھی جلد قرض ملنے کی توقع

اسلام آباد : ورلڈ بینک پاکستان کوتین مختلف منصوبوں کیلئے 91 کروڑ 80 لاکھ ڈالر دے گا دونوں فنڈز فراہمی کے معاہدے پر دستخط ہوگئے ہیں. تفصیلات کے مطابق عالمی بینک اورپاکستان کے درمیان تین مختلف منصوبوں کیلئے فنڈز فراہم کے معاہدے پر دستخط ہوگئے ، دستخط کی تقریب میں مشیرخزانہ ڈاکٹرعبدالحفیظ شیخ بھی موجود تھے‘ورلڈ بینک پاکستان کوتین مختلف منصوبوں کیلئے فنڈز فراہم کرئے گا فنڈز کا حجم91کروڑ 80 لاکھ ڈالر ہوگا.
عالمی بینک ٹیکس وصولیاں بڑھانے کے منصوبے کیلئے 40 کروڑ ڈالر دے گا، منصوبے سے جی ڈی پی میں ٹیکسوں کاتناسب17فیصدکیاجائے گا اور منصوبے کے تحت ملک میں ٹیکس دہندہ افراد کی تعداد 20 لاکھ سے بڑھا کر 35 لاکھ کی جائےگی. اعلامیہ کے مطابق 40 کروڑ ڈالر مالیت کا دوسرا قرض اعلی تعلیم کی ترقی کیلئے استعمال کیا جائےگا اور پروگرام کے تحت اہم شعبوں میں تعلیم و تربیت کو بہتر بنایا جائےگا.
ورلڈ بینک کا کہنا ہے 11 کروڑ 89 لاکھ ڈالر مالیت کا تیسرا قرض پروگرام خیبر پختونخواہ میں ٹیکس وصولیوں کا نظام میں بہتری کیلئے استعمال میں بلایا جائےگا. معاہدے کے بعدصحافیوں سے بات کرتے ہوئے مشیر خزانہ نے کہاکہ ورلڈ بینک ہمارا دیرینہ پارٹنر ہے‘یاد رہے چند روز قبل ہی عالمی بینک نے پاکستان کیلئے 51 کروڑ 80 لاکھ ڈالر کے قرض کی منظوری دی تھی، جاری اعلامیہ میں کہا گیا تھا قرض ٹیکس وصولیاں بڑھانے کے دو منصوبوں کیلئے فراہم کیا گیا ہے.
اعلامیہ کے مطابق منصوبے کے تحت ٹیکس نظام کو سادہ اور ٹیکس اور کسٹم انتظامیہ کے استعدادکار کو ٹیکنالوجی اور فنی مہارت سے بہتر بنایا جائےگا. عالمی بینک اعلامیہ میں کہا گیا منصوبے کے تحت ٹیکس نظام کو سادہ اور ٹیکس اور کسٹم انتظامیہ کے استعدادکار کو ٹیکنالوجی اور فنی مہارت سے بہتر بنایا جائےگا اور ایف بی آر ڈیجیٹلائزیشن سے ٹیکس دہندہ کی معلومات کو زیادہ ٹیکس وصولیاں کیلئے استعمال کر سکے گا. وزارت خزانہ کے مطابق آئی ایم ایف سے معاہدے کے بعد عالمی بینک سے قرض ملنے کی راہ ہموار ہوئی ،ایشیائی ترقیاتی بینک کی طرف سے بھی جلد منصوبوں کیلئے قرض فراہم کیا جائےگا.

تاریخ اشاعت : منگل 18 جون 2019

Share On Whatsapp