سابق صدر آصف علی زرداری کے جیل سے باہر آنے کا انتظام ہو گیا

اسپیکر قومی اسمبلی نے ان کے پروڈکشن آرڈر اگلے ہفتے جاری کرنے کی نوید سنا دی

لاہور :   ایوان میں بجٹ پیش ہونے سے ایک دن قبل سابق صدر آصف علی زرداری کو نیب نے گرفتار کرتے ہوئے حراست میں لے لیا۔آصف زرداری کو ان کی ضمانت خارج ہونے پر گرفتار کیا گیا۔تاہم اب پیپلز پارٹی اپنے راہنما کو جیل سے نکلوانے کے لیے کوششیں کر رہے ہیں جس کے لیے سب سے آسان راستہ پروڈکشن آرڈر جاری کروانا ہے کہ اس ذریعے سے وہ عارضی طور پر سہی مگر جیل سے باہر آ جائیں گے۔
اس حوالے سے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری کے پروڈکشن آرڈر اگلے ہفتے جاری کر دیے جائیں گے۔ ذرائع کے مطابق راجا پرویز اشرف کی قیادت میں پیپلز پارٹی کے وفد نے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے ملاقات کی جس میں سابق صدر آصف علی زرداری، محسن داوڑ اور علی وزیر کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔ سپیکر اسد قیصر نے محسن داوڑ اور علی وزیر کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے سے معذرت کرتے ہوئے کہا کہ ان دونوں اراکین کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنا میرے بس میں نہیں۔
تاہم آصف علی زرداری کے پروڈکشن آرڈر اگلے ہفتے جاری کر دیے جائیں گے۔ امید یہی ظاہر کی جا رہی ہے کہ مطابق آصف علی زرداری کے پروڈکشن آرڈر پیر کے روز ہونے والے اجلاس کے لیے جاری ہونے کا امکان ہے۔جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کے زیر صدارت مشاورتی اجلاس بھی ہوا جس میں آصف زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری کرانے اور بجٹ کے معاملے پر غور کیا گیا۔
بلاول بھٹو نے پارٹی راہنماو¿ں کو ہدایت کی کہ آصف زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کا معاملہ سپیکر قومی اسمبلی کے ساتھ اٹھایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ رکن قومی اسمبلی کا اجلاس میں شرکت کرنا آئینی حق ہے۔ سپیکر سے معاملہ اٹھا کر رولز پر عملدرآمد کو یقینی بنانے کی درخواست کی جائے۔اب دیکھنا یہ ہے کہ اگلے ہفتے سابق صدر آصف زرداری جیل سے باہر آ پاتے ہیں یا نہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 13 جون 2019

Share On Whatsapp