آن لائن ٹیکسی سروس غیر محفوظ، کراچی میں آن لائن کمپنی کے ڈرائیورز شہریوں کو لوٹنے لگے

متاثرہ خاتون نے پوری کہانی بتا دی، پولیس نے ملزم کو 3 ساتھیوں سمیت گرفتار کر لیا

کراچی : : کراچی میں آن لائن ٹیکسی سروس غیر محفوظ ہو گئی۔ تفصیلات کے مطابق شہر قائد میں آن لائن ٹیکسی سروس کی آڑ میں شہریوں کو لُوٹنے والے گروہ کا انکشاف ہوا ہے۔ متاثرہ خاتون نے پولیس کوشکایت درج کروائی جس پر پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ٹیکسی ڈرائیور کو تین ساتھیوں سمیت گرفتار کر لیا۔ متاثرہ خاتون نے بتایا کہ میں اپنی چھُٹیاں گزارنے کراچی آئی ہوئی تھی، میں نے تین جون کو آن لائن ٹیکسی سروس اوبر سے ایک رائیڈ بُک کروائی ، ڈرائیور مجھے گارڈن ٹاؤن سے لینے کے لیے آیا۔
خاتون نے بتایا کہ راستے میں ڈرائیور نے گاڑی دوسرے راستے کی طرف موڑی تو میں نے ان سے سوال کیا کہ آپ اُس طرف کیوں جا رہے ہیں؟ جس پر انہوں نے جواب دیا کہ یہ چھوٹا راستہ ہے اور یہاں ٹریفک بھی زیادہ نہیں ہوتی ۔ لیکن میں نے اصرار کیا کہ آپ دوسرے راستے سے ہی جائیں، ایکسپو سینٹر والی روڈ پر گاڑی آئی تو راستے میں میزان بینک آتے ہی میں نے ڈرائیور سے گذارش کی کہ گاڑی روکیں مجھے اے ٹی ایم استعمال کرنا ہے انہوں نے اُس میزان بینک پر نہیں روکا کیونکہ وہاں بہت رش ہوتا ہے۔
ڈرائیور نے آگے جا کر کم رش والے میزان بینک کے سامنے گاڑی روکی جس کے بعد ڈرائیور نے مجھے ہراساں کرنے کی کوشش کی اور کہا کہ آپ اپنے فون گاڑی میں چھوڑ کر گاڑی سے باہر چلی جائیں۔ میں گاڑی میں فون رکھ کر اے ٹی ایم کے اندر چلی گئی اور اے ٹی ایم کا دروازہ لاک کر لیا جس کے بعد میں نے پولیس اسٹیشن کا رُخ کیا جہاں موجود افسران نے مجھ سے کافی تعاون کیا۔
اُن کی مدد سے ہی میں ملزم کو ٹریس کر پائی اور آج پولیس نے ان کو گرفتار کر لیا ہے جس کے لیے میں ان کی بے حد مشکور ہوں۔ دوسری جانب پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان مسافروں بالخصوص خواتین کو لوٹنے میں ملوث ہیں۔ گروہ میں آن لائن ٹیکسی فرنچائز کا مالک بھی شامل ہے۔ملزمان جعلی آئی ڈیز بنا کر لوگوں کے نام سے کیپٹن کا ڈیٹا فیڈ کرتے تھے۔ڈرائیور اعجاز نے خاتون کو ہراساں کیا اور اُس سے موبائل فون بھی چھینا۔
پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان سے مزید تفتیش کی جا رہی ہے۔ خیال رہے کہ ملک بھر میں شہریوں کو آسان سفری سہولیات کی فراہمی کے لیے آن لائن ٹیکسی سروسز چل رہی ہیں جن سے ایک طرف جہاں کئی شہری مستفید ہو رہے ہیں وہیں دوسری جانب ٹیکسی سروسز سے متعلق آئے دن شکایات بھی موصول ہو رہی ہیں۔ ٹیکسی سروس کے ڈرائیورز کی جانب سے خواتین کو ہراساں کیے جانے کی بھی کئی شکایات موصول ہوئیں جن پر ایکشن بھی لیا گیا تاہم اب آن لائن ٹیکسی سروسز کے غیر محفوظ ہونے کی بھی کافی شکایات موصول ہو رہی ہیں۔ اور اقرا حمید کا کیس اس کی تازہ مثال ہے۔

تاریخ اشاعت : بدھ 12 جون 2019

Share On Whatsapp