الطاف حسین کی گرفتاری ، پاکستان کی ایجنسیوں اور متحدہ رہنماؤں نے اہم کردار ادا کیا

ملک کی پرائم انٹیلی جنس سروس نے طویل مانیٹرنگ آپریشن کے ذریعے ایم کیو ایم کے بانی سے متعلق ٹھوس شواہد اسکاٹ لینڈ یارڈ کو فراہم کیے تھے

اسلام آباد : : گذشتہ روز اسکاٹ لیںڈ یارڈ نے بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کو لندن میں ان کے گھر سے گرفتار کرلیا جس کے بعد انہیں مقامی پولیس اسٹیشن منتقل کیا گیا جہاں ان سے تفتیش کی گئی۔ الطاف حسین کی گرفتاری میں پاکستان کی انٹیلی جنس ایجنسیوں اور متحدہ کےہی کئی رہنماؤں نے اہم کردار ادا کیا۔ اس حوالے سے قومی اخبار میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق سکیورٹی حلقوں کا کہنا ہے کہ بانی ایم کیو ایم الطاف حسین مغرب کی بڑی ایجنسیوں کا اثاثہ ہیں۔
اپنے تحفظ میں ناکامی پر الطاف حسین کو سزا ہو سکتی ہے۔ اس حوالے سے ایک اعلیٰ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ملک کی پرائم انٹیلی جنس سروس نے طویل مانیٹرنگ آپریشن کے ذریعے بانی متحدہ الطاف حسین سے متعلق ٹھوس شواہد سکاٹ لینڈ یارڈ کو فراہم کیے۔ متحدہ کے سینئیر رہنماؤں نے بھی رضاکارانہ بنیادوں پر ملک کی پرائم انٹیلی جنس سروس اور تحقیقاتی اداروں کو بانی متحدہ کی پاکستان کے خلاف اشتعال انگیز کارروائیوں کے حوالے سے اہم شواہد فراہم کیے جو اسکاٹ لینڈ یارڈ سے شیئر کئے گئے تھے۔
ملک کی پرائم انٹیلی جنس سروس نے دوسری ٹاپ انٹیلی جنس ایجنسیوں اور تحقیقاتی اداروں اور متحدہ قومی مومنٹ کے سینئیر رہنماؤں کی مدد اور براہ راست مانٹیرنگ کے نتیجے میں بانی متحدہ کے خلاف پاکستان مخالف کارروائیوں کا مضبوط کیس بنا کر اسکاٹ لینڈ یارڈ اور برطانیہ کی سکیورٹی ایجنسیوں سے شئیر کیا۔ اسکاٹ لینڈ یارڈ نے ان شواہد کی روشنی میں اپنی تحقیقات کیں جس کے بعد وہ اس نتیجے پر پہنچے کہ بانی متحدہ برطانیہ کے قوانین کی خلاف ورزی میں ملوث ہیں اور برطانیہ کی سرزمین کو استعمال کرتے ہوئے وہ دولت مشترکہ کے ایک ممبر ملک کے خلاف اشتعال انگیز کارروائیاں کر رہے ہیں ۔
تفتیشی انٹرویوز کے لیےا سکاٹ لینڈ یارڈ نے بانی متحدہ کو حراست میں لے لیا۔ متحدہ قومی مومنٹ کے سینئیر رہنماؤں نے پارٹی کے بانی سے متعلق کئی ناقابل تردید ویڈیوز اور دیگر شواہد ملک کی پرائم انٹیلی جنس سروس اور ان کے ذریعے تحقیقاتی اداروں اور برطانیہ کے تحقیقاتی ادارے اسکاٹ لینڈ یارڈ اور سکیورٹی ایجنسیوں سے شئیر کیے ۔بانی متحدہ کے بارے میں کچھ سکیورٹی حلقوں کا کہنا ہے کہ وہ ایک مغرب کی بڑی انٹیلی جنس ایجنسی کے اثاثہ ہیں جنہوں نے سے ماضی میں کئی موقعوں پر اسے تحفظ فراہم کیا۔
اسکاٹ لینڈ یارڈ اور ان کے بعد کراؤن پراسیکیوشن سروس اگر بانی متحدہ کے خلاف مضبوط کیس بنانے میں کامیاب ہو جاتے ہیں اور مغرب کی بڑی انٹیلی جنس ایجنسی اسے مزید تحفظ فراہم کرنے میں ناکام ہو جاتی ہے تو بانی متحدہ الطاف حسین کو سزا ہو سکتی ہے اور سزا پوری کرنے کے بعد پاکستان میں بانی ایم کیو ایم کے خلاف چلنے والے مختلف کیسز میں انہیں پاکستان کے حوالے کیا جا سکتا ہے ۔
خیال رہےکہ گذشتہ روزایم کیو ایم کے بانی اور قائد کو لندن میں گرفتارکیا گیا تھا۔ اسکاٹ لینڈ یارڈ نے صبح سویرے بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کے گھر پر چھاپہ مارا۔ چھاپے میں 15 کے قریب پولیس اہلکاروں نے حصہ لیا۔ جس کے بعد بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کی ضمانت کے لیے درخواست دائر کر دی گئی تھی۔ یہ درخواست ایم کیو ایم کے وکلا نے دائر کی تھی۔

تاریخ اشاعت : بدھ 12 جون 2019

Share On Whatsapp