محسن داوڑ کا ساتھیوں کے ہمراہ پاک فوج کی چوکی پر حملہ ، پاک فوج کا سپاہی شہید

آئی ایس پی آر نے بھی حملے میں زخمی ہونے والے سپاہی گل خان کی شہادت کی تصدیق کر دی

راولپنڈی : :شمالی وزیرستان میں گذشتہ روز پاک فوج کی چیک پوسٹ پر ہونے والے حملے کے نتیجے میں زخمی ہونے والا پاک فوج کا سپاہی دم توڑ گیا ۔ تفصیلات کے مطابق پاک فوج کا سپاہی گل خان گذشتہ روز پاک فوج کی چیک پوسٹ پر حملے کے دوران زخمی ہوا تھا جسے طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا لیکن وہ زخموں کی تاب نہ لا سکا اور شہید ہو گیا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے بھی پاک فوج کے سپاہی گل خان کی شہادت کی تصدیق کر دی ہے۔
آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ گذشتہ روز شمالی وزیرستان میں پاک فوج کی چیک پوسٹ پر حملے کے نتیجے میں زخمی ہونے والے فوجی اہلکاروں میں سپاہی گل خان بھی تھا جو شہید ہو گیا ہے۔ یاد رہے کہ کہ گذشتہ روز رکن قومی اسمبلی محسن داوڑ نے اپنے ساتھیوں سمیت سکیورٹی اہلکاروں کی چیک پوسٹ پر حملہ کر دیا تھا جس کے نتیجے میں پانچ اہلکار زخمی ہو گئے تھے تاہم جوابی کارروائی میں تین حملہ آور مارے گئے جبکہ دس افراد زخمی ہوئے تھے۔
پختونخوا تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) کے رہنما علی وزیر سمیت چیک پوسٹ حملے میں ملوث 8 افراد کو بھی گرفتار کر لیا گیا تھا۔ آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا کہ رکن قومی اسمبلی محسن داوڑ اور علی وزیر کی سربراہی میں ایک گروہ نے خاڑ قمر چیک پوسٹ پر حملہ کیا، جس کا مقصد دہشت گردوں کے مشتبہ سہولت کاروں کو رہائی دلوانا تھا۔ اس حملے کے بعد دہشتگردوں نے رات گئے وادی شوال کی مکی گڑھ پوسٹ کو نشانہ بنایا تھا جسے پاک فوج نے ناکام بنا دیا تھا۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق سکیورٹی فورسز نے مؤثرجواب سے دہشتگردوں کے اس حملے کو پسپا کردیا۔ فائرنگ کے تبادلے میں پاک فوج کا ایک جوان شہید ہوا۔ دوسری جانب ترجمان پاک فوج کے مطابق اس سے قبل خڑکمر پوسٹ پرہونے والے حملے کے بعد پیٹرولنگ کے دوران بویا میں نالے سے گولیاں لگی پانچ لاشیں برآمد ہوئی تھیں جن کی شناخت کا عمل جاری ہے۔یہ لاشیں گذشتہ روز حملے کا نشانہ بننے والی خاڑ کمر چیک پوسٹ سے ڈیڑھ کلو میٹر کے فاصلے سے ملی تھیں۔

تاریخ اشاعت : پیر 27 مئی 2019

Share On Whatsapp