سابق ڈی جی آئی ایس آئی جنرل شجاع پاشا کو چئیرمین نیب بنائے جانے کا امکان

جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کو ہٹائے جانے کی صورت میں شجاع پاشا چئیرمین نیب ہو سکتے ہیں،پی ٹی آئی رہنما کا دعویٰ

کراچی : پاکستان تحریکِ انصاف کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی ڈاکٹرعامر لیاقت حسین نے اپنے ٹویٹر پیغام میں دعویٰ کیا ہے کہ سابق ڈی جی آئی ایس آئی جنرل شجاع پاشا کو چئیرمین نیب بنائے جانے کا امکان ہے۔ ڈاکٹرعامر لیاقت نے ذرائع کا حوالہ دے کر لکھا ہے کہ’ سابقہ ڈی جی آئی ایس آئی جنرل شجاع پاشا کو نیب چیئرمین بنائے جانے کا امکان،، ذرائع‘۔
اس ٹویٹ کے بعد یہ ظاہر ہو رہا ہے کہ موجودہ چئیرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال جلد عہدے سے ہٹنے والے ہیں، اس حوالے سے پہلے ہی قیاس آرائیاں جاری ہیں کہ جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کو عہدے سے ہٹا دیا جایا گیا حالانکہ گزشتہ دنوں ان سے منسوب کر کے جاری کی گئی جعلی ویڈیو کے معاملے میں حکومت اور حکومتی جماعت نے ان کا مکمل طور پر دفاع کیا ہے تاہم یہ خبریں آرہی ہیں کہ انہیں جلد عہدے سے ہٹا دیا جائے گا، اس سے پہلے یہ قیاس کیا جارہا تھا کہ گزشتہ ماہ لگائے گئے ڈبٹی چئیرمین نیب حسن اصغر کو چئیرمین نیب بنایا جائے گا لیکن اب پاکستان تحریکِ انصاف کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی ڈاکٹرعامر لیاقت حسین نے کہا ہے کہ سابق ڈی جی آئی ایس آئی جنرل شجاع پاشا کو چئیرمین نیب بنائے جانے کا امکان ہے۔
واضح رہے کہ جنرل شجاع پاشا جن کی عمر 67سال ہے وہ 2008سے 2012تک آئی ایس آئی کے ڈی جی رہے، انہیں جنرل ندیم تاج کے بعد آئی ایس آئی کے ڈی جی کا عہدہ دیا گیا تھا اور 2012میں پاک فوج سے ریٹائرڈ ہو گئے انہیں ان کی بہترین کارکردگی کی وجہ سے ’سپائے ماسٹر‘ کہا جاتا تھا اور ان کی کدمات کے صلہ میں انہیں ’ہلال امتیاز‘ سے بھی نوازا گیا۔ اب عامر لیاقت حسین نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ جنرل شجاع پاشا کو چئیرمین نیب بنایا جائے گا۔ 

تاریخ اشاعت : پیر 27 مئی 2019

Share On Whatsapp