A Healthy Dog Was Put Down So It Could Be Buried With Its Owner

مالک کے ساتھ دفن ہونے کے لیے صحت مند کتے کو بھی مرنا پڑا

ایما نامی خوبصورت اور صحت مند کتیا کو اپنی مالکن کی وصیت کی وجہ سے موت کے منہ میں جانا پڑا۔ ایمان کی مالکن نے وصیت کی تھی کہ ان کی پیاری کتیا کو اِن کے مرنے پر اِن  کے ساتھ ہی دفن کیا جائے۔
ایما کو 8 مارچ کو  چیسٹرفیلڈ، ورجینیا میں چیسٹر فیلڈ کاؤنٹی اینیمل شیلٹر لایا گیا، جہاں اسے دو ہفتے رکھا گیا۔ جانوروں کے تحفظ کے اس مرکز نے کئی بار ایما کی مالکن  کے ورثا سے درخواست کی کہ اپنے فیصلے پر نظر ثانی کریں کیونکہ کوئی بھی خاندان ایما کو اپنا سکتا تھا۔

22 مارچ کو  آخری درخواست کے جواب میں بھی جب ورثا نے ایما کو ٹھکانے لگانے کا کہا تو اسے جانوروں کے ڈاکٹر کے پاس لے جایا گیا، جہاں اسے پرسکون موت دے دی گئی۔ مرنے کے بعد ایما کی لاش کو جلایا گیا اور راکھ کو مرتبان میں ڈال کر قبر میں  ایما کی مالکن کی باقیات کے پاس رکھ دیا گیا۔
امریکا کی کچھ ریاستوں میں پالتو جانوروں کو ذاتی ملکیت سمجھا جاتا ہے اور جانوروں کے ڈاکٹروں کا مالکان کی خواہش کے مطابق، چاہے یہ خواہش اُن کے مرنے کے بعد سامنے آئے،   پالتو جانوروں کو پرسکون موت دینا قانونی ہے۔
امریکا کی تمام ریاستیں پالتو جانوروں کو مار کر انہیں مالکان کے ساتھ دفن کرنے کی اجازت نہیں دیتی لیکن کچھ ریاستوں جیسے ورجینیا میں یہ عام ہے۔
عام طور پر پالتو جانوروں کو اس وقت پرسکون موت دی جاتی ہے جب وہ بہت بوڑھے ہوجائیں یا  کافی بیمار ہوں اور انہیں نیا گھر ملنے کی امید نہ ہو لیکن ایما کے کیس میں ایسا نہیں ہے۔ ایما خوبصورت تھی اور بالکل صحت مند تھی۔ بہت سے لوگ اسے اپنانا چاہتے تھے۔
ایما کی درد ناک کہانی نے انٹرنیٹ پر ایک نئی بحث کا آغاز کر دیا ہے۔ دنیا بھر کے ہزاروں صارفین کا کہنا ہے کہ اس صورتحال کو قابل نفرت طریقے سے حل کیا  گیا ہے۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 24 مئی 2019

Share On Whatsapp
سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں