حکومت نے ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کرنے والی کمپنیوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ کر لیا

حکومت نے چند کمپنیوں کو ادویات کی قیمت میں 9فیصد اضافے کی منظوری دی لیکن کئی کمپنیوں نے ازخود ادویات مہنگی کر دیں

اسلام آباد : وفاقی حکومت نے ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کرنے والی کمپنیوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ کر لیاہے۔ حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ جن کمپنیوں نے ادویات کی قیمتیں بڑھائی ہیں ان کے خلاف کاروائی کی جائے گی اور اس کے لیے پورٹل بنانے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق حکومت نے صرف چند ادویات ساز کمپنیوں کو قیمت میں 9فیصد تک اضافے کی منظوری دی تھی لیکن دوسری بہت سی کمپنیوں نے ازخود ادویات کی قیمتوں میں 300 سے 400 فیصد اضافہ کر دیا۔
ادویات میں اضافے کے خلاف عوام بھڑک اٹھی تھی اور لوگوں کا کہنا تھا کہ جان بچانے والی ادویات کو مہنگا کر کے لوگوں کی زندگیوں کے ساتھ کھیلا جا رہا ہے لیکن اب پتا چلا ہے کہ کمپنیوں نے ادویات کی قیمتوں میں ازخود اضافہ کر دیا ہے اور حکومت نے ان کمپنیوں کے خلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ کیا ہے اور جن کمپنیوں نے ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کیا ہے ان کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے گی۔ اس حوالے سے حکومت نے پورٹل قائم کرنے کا بھی فیصلہ کیا ہے جہاں شہری مہنگی ادویات بیچنے والے سٹورز کے خلاف شکایات درج کروا سکیں گے۔

تاریخ اشاعت : جمعرات 4 اپریل 2019

Share On Whatsapp