Hafeez And Shoaib Malik Important For World Cup: Mickey Arthur

حفیظ اور شعیب ملک ورلڈ کپ کیلئے مکی آرتھرکی امیدوں کا محور

دونوں کی کارکردگی اچھی رہی تو زائد سکور کی بدولت حریف ٹیموں پر دباﺅ ڈالنا ممکن ہو سکے گا :ہیڈ کوچ

لاہور : امیدوں کا محور تبدیل کرتے ہوئے قومی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر کو اب ورلڈ کپ میں سینئرز کے چمکنے کا انتظار ہے ،ان کا کہنا ہے کہ محمد حفیظ اور شعیب ملک کیلئے رواں سال میگاایونٹ غیر معمولی ثابت ہو سکتا ہے ،ان کی کارکردگی اچھی رہی تو زائد سکور کی بدولت حریف ٹیموں پر دباﺅ ڈالنا ممکن ہو سکے گا،محمد عامر کی ون ڈے فارم پر کافی پریشانی لاحق ہے ،ہماری طرح وہ بھی اس بات سے واقف ہے ،بال سوئنگ ہونے لگے تو پھر اس سے اچھا باﺅلر کوئی بھی نہیں ہو سکتا۔
تفصیلات کے مطابق حالیہ عرصے میں جونیئر اور نئے کھلاڑیوں پر داﺅ کھیلنے کے بعد آخرکار ہیڈ کوچ مکی آرتھر کو سینئر کھلاڑیوں کا بھی خیال آ ہی گیا جنہوں نے اعتراف کیا ہے کہ محمد حفیظ اور شعیب ملک کیلئے رواں سال ورلڈ کپ غیر معمولی ایونٹ ثابت ہوگا۔ان کا کہنا تھا کہ محمد حفیظ اور شعیب ملک مڈل آرڈر میں انتہائی اہم بیٹسمین ہیں جن کی سپن باﺅلنگ کی صلاحیت سے بھی ضرورت کے وقت عالمی کپ میں استفادہ کیا جائے گا۔
مکی آرتھر کو یقین ہے کہ ورلڈ کپ میں سینئر کھلاڑی اپنا بھرپور کردار نبھائیں گے کیونکہ بڑے ایونٹس میں ایسے کھلاڑیوں کی ضرورت ہوتی ہے جو پہلے بھی اس امتحان سے گزر کر بہترین کھیل پیش کر چکے ہوں اور امید ہے کہ محمد حفیظ اور شعیب ملک اپنا موثر کردار ادا کریں گے۔ مکی آرتھر کا کہنا تھا کہ اگرچہ محمد عامر کے اعداد و شمار مثالی نہیں لیکن بعض اوقات چھٹی حس کسی باﺅلر پر بھروسہ کرنے پر اکساتی ہے اور جنوبی افریقہ میں اہم موقع پر محمد عامر کی جانب سے عمدہ باﺅلنگ پر انہیں اطمینان حاصل ہوا ہے کہ وہ ضرورت کے وقت اپنی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کر سکتے ہیں۔

تاریخ اشاعت : پیر 11 فروری 2019

Share On Whatsapp