کویت: پردیس میں مقیم پاکستانی نوجوان کی جذباتی گفتگو نے پاکستانیوں کو رُلا دیا

آنسوؤں سے بھری آنکھوں کے ساتھ دیا گیا پیغام سوشل میڈیا پر وائرل ہو گیا

کویت : اس وقت دُنیا کے مختلف ممالک میں 80 لاکھ کے قریب پاکستانی روزگار کے سلسلے میں مقیم ہیں۔ وطن سے دُور رہ کر ہی وطن کی اہمیت کا احساس ہوتا ہے۔ جو سُکھ اور مزہ اپنے وطن میں ہے، وہ دُنیا میں اور کہیں نہیں ہے۔ پاکستان میں مقیم لوگ سمجھتے ہیں کہ اُن کے پیارے دیارِ غیر میں بڑی آرام و آسائش کی زندگی بسر کر رہے ہیں۔ پردیس میں پیسے درختوں پر اُگتے ہیں، جنہیں کوئی بھی آسانی سے توڑ سکتا ہے۔
لیکن پردیس میں رہنے والوں کے دُکھ اور وطن کی مٹی کی خوشبو سے محرومی کا غم وہی سمجھ سکتا ہے جو خود بھی اس کیفیت سے گزرتا ہے۔ سوشل میڈیا پر کویت میں مقیم ایک پاکستانی محمد نعیم جان کی ویڈیو وائرل ہوئی ہے جس میں وہ ایک سڑک کنارے گاڑی میں بڑے اُداس چہرے اور آب دیدہ آنکھوں کے ساتھ پاکستانیوں سے مخاطب ہوتا ہے۔ اپنے اس ویڈیو پیغام میں شدتِ جذبات سے کئی بار اُس کی آنکھیں چھلک پڑیں اور آواز نے ساتھ دینا چھوڑ دیا۔
یہ ویڈیو ایک محبِ وطن پاکستان کی آواز ہے جو وطن سے دُور رہ کر بھی وطن کو اپنے وجود سے باہر نہیں نکال پایا۔ بُلند و بالا عمارتیں اور بے پناہ ترقی کا اظہار کرتیں سڑکیں اور مادی اشیاء کی چکا چوند بھی اُس کی وطن سے جُدائی کے صدمے کا مداوا نہیں کر سکیں۔ اپنے اس پیغام میں وہ ہم وطنوں سے مخاطب ہو کر کہتا ہے کہ وطن ہمارے دِل میں بستا ہے۔ ہم جب اس پردیس میں ہونے والی ڈھیر ترقی اور خوشحالی کو دیکھتے ہیں تو ہمارے دِل سے بھی آہ نکلتی ہے اور ساتھ ہی دُعا بھی نکلتی ہے کہ کاش ہمارا مُلک بھی ترقی کی منازل طے کرے۔
خوشحالی آئے، لوگوں کو روزگار مِلے۔ لوگ پریشان نہ ہوں۔ لوگوں کو انصاف مِلے۔ ہم تمام اوور سیز اپنی جنت پاکستان سے بہت پیار کرتے ہیں۔ نوجوان نے پاکستان میں مقیم تمام افراد سے درخواست کی کہ وہ اپنی خوشیوں اور غموں میں وطن کی مٹی سے دُور افراد اپنی دُعاؤں میں کبھی نہ بھُولیں۔ ہمارے دِل آپ کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔خُدا کرے پاکستانی پاسپورٹ کی عزت ہو۔ اس نوجوان کے وطن کے لیے خلوص اور تڑپ نے لاکھوں پاکستانیوں کے دِل جیت لیے ہیں۔

تاریخ اشاعت : جمعہ 11 جنوری 2019

Share On Whatsapp