غزہ اسرائیل سرحد پر کشیدگی، صیہونی فوج کی فائرنگ سے 16 فلسطینی شہید درجنوں زخمی

غزہ : فلسطین کے غزہ کی پٹی میں سرحدی باڑ پر احتجاج کے دوران اسرائیلی فوج کی کارروائی کے دوران مزید 2 فلسطینی شہید ہوگئے جس کے بعد شہادتوں کی تعداد 12 ہوگئی جبکہ صہیونی فورسز کی فائرنگ اور آنسو گیس کے استعمال سے 50سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے۔عرب میڈیا رپورٹس کے مطابق فلسطین کی وزارت صحت کا کہنا تھا کہ غزہ میں احتجاج کے دوران جمعے کو اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے مزید دو فلسطینی جوان شہید ہو گئیجن کی شناخت محمد ابو عمار اور محمد ابو معمار کے نام سے ہوئی ہے جنھیں اسرائیلی فوج نے مختلف جھڑپوں میں نشانہ بنایا۔
فلسطینی حکام کے مطابق اسرائیلی فوج سے تصادم کے دوران ایک فلسطینی جاں بحق ہوا اور دوسرے واقعے میں ٹینکوں کی فائرنگ سے ایک کسان بھی جاں بحق ہوا تھا۔فلسطین اور اسرائیل کے درمیان سرحد میں حماس کی جانب سے مختلف مقامات پر ہونے والے احتجاج کے دوران جب کشیدگی بڑھی تو مظاہرین نے پتھراؤ کیا جبکہ اسرائیلی فوجیوں کی جانب سے فائرنگ کی گئی۔
عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ سیکڑوں فلسطینیوں کی جانب سے احتجاج کیا گیا اور اسرائیلی فوج سے تصادم ہوا جبکہ سرحد سے چند میٹر کے فاصلے پر پانچ مختلف مقامات پر ہزاروں کی تعداد میں مظاہرین جمع تھے۔دوسری جانب سے اسرائیلی فوج کا کہنا تھا کہ ہزاروں کی تعداد میں فلسطینیوں نے ٹائرز کو نذر آتش کیا اور سرحد پر تعینات فوج پر پتھراؤ کیا جس کے جواب میں فوج کی جانب سے فائر کھول دیا گیا۔
ان کا کہنا تھا کہ ہم اس کو اسرائیل کی خود مختاری کی خلاف ورزی یا سیکیورٹی باڑ کو نقصان پہنچانے کے طور پر دیکھ رہے ہیں۔خیال رہے کہ فلسطینیوں کی جانب سے اسرائیلی قبضے اور مقامی افراد کو بے دخل کرنے کے 70 برس پورے ہونے کے سلسلے میں احتجاجی مظاہرے کررہے ہیں اور 15 مئی کو وسیع پیمانے پر سرحدی باڑ کے ساتھ احتجاج کرنے کی تیاری کررہے ہیں۔

تاریخ اشاعت : ہفتہ 31 مارچ 2018

Share On Whatsapp